قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شیرپاؤنے پختونوں کی مشکلات اور مسائل کے حل کیلئے مشترکہ کوششوں کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ان کو مہنگائی و بے روزگاری اور پسماندگی کا سامنا ہے جبکہ گزشتہ انتخابات
سابق صوبائی وزیرحاجی ابرار حسین تنولی نے اپنے خاندان اور سینکڑوں ساتھیوں سمیت قومی وطن پارٹی میں شمولیت کا اعلان کردیا۔اس سلسلے میں ضلع مانسہرہ میں ایک شمولیتی تقریب منعقد ہوئی جس سے قومی وطن پارٹی کے چیئرمین آفتاب احمد خان شیرپاؤ اور پارٹی کے مرکزی و صوبائی قائدین نے
قومی وطن پارٹی کے چیئرمین آفتاب احمد خان شیرپاؤ نے پختونوں میں بڑھتی ہوئی احساس محرومی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت صوبے کے حقوق کے تحفظ اور پختونوں کے مسائل کے حل میں بری طرح ناکام ہو چکی ہے۔ان خیالات کا اظہار
قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شیرپاؤ نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت صوبہ کے حقوق کے حصول کیلئے مرکزی حکومت کے سامنے بے بس نظر آرہی ہے کیونکہ ایک طرف وفاقی حکومت نہ این ایف سی ایوارڈ کا اجراء اور نہ ہی بجلی خالص منافع کی
قومی وطن پارٹی کی صوبائی کونسل نے پی ٹی آئی کی حکومت کو ناکام ترین حکومت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عوام کے ساتھ کئے گئے وعدوں میں ایک وعدہ بھی پورا نہیں کیاگیا جبکہ مہنگائی میں سو چند اضافہ اور بجلی و گیس اور پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں