قومی وطن پارٹی کے ایک وفدنے پارٹی کے چیئرمین آفتاب احمد خان شیرپاؤ کی سربراہی میں وزیر اعظم پاکستان میاں محمد شہبازشریف سے وزیر اعظم ہاؤس اسلام آبادمیں ملاقات کی جس میں موجودہ سیاسی صورتحال سمیت قومی اور عوامی اہمیت کے امور پر بات چیت ہوئی۔وفد میں قومی وطن پارٹی کے مرکزی سینئر وائس چیئرمین حاجی محمد غفران،صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شیرپاؤ،مرکزی ڈپٹی جنرل سیکرٹری احمد نواز خان جدون اور صوبائی جنرل سیکرٹری ہاشم بابر شامل تھے۔ملاقات میں قائدین نے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ حکومت کی غلط پالیسیوں کی بدولت معیشت کا بیڑہ غرق کردیا گیا اور ملک و قوم پر قرضوں کے انبار لگا دیئے۔انھوں نے کہا کہ سابقہ حکومت کے گند کو صاف کرنے کیلئے موجودہ حکومت کو انھتک محنت کرنا پڑے گی جس کیلئے ہم پر امید ہے کہ اس ضمن میں اتحادی حکومت کارکردگی اور بہتر طرز حکمرانی کے ذریعے ملک و قوم کے مسائل پر قابو پانے کیلئے عملی اقدامات اٹھائے گی۔اس موقع پر ملک کی معاشی اور سیاسی صورتحال میں بہتری واستحکام لانے کی طرف توجہ دینے کی ضرورت پرزور دیا گیا اور کہا کہ ایک مخصوص جماعت نوجوانوں میں اشتعال پیدا کرکے ان کو تشدد پر اکسانے اور ملک کوانار کی کی طرف لے جارہی ہے۔ قومی وطن پارٹی کے وفد نے وزیر اعظم سے کہا کہ خیبر پختونخوااور یہاں کے عوام کے مسائل کے حل اور ضم شدہ قبائلی اضلاع کے ساتھ ترقی و خوشحالی اور ترقیاتی فنڈز کی فراہمی کی مد میں کئے گئے وعدے پورے کئے جائیں تاکہ ان کی مایوسی و محرومی میں کمی لائی جاسکے۔شرکائے وفد نے کہا کہ خیبر پختونخوا اپنی ضرورت سے زیادہ اور سستی بجلی پیدا کرنے والا صوبہ ہے لیکن سب سے زیادہ لوڈشیڈنگ بھی یہاں پر ہورہی ہے لہٰذا بجلی و گیس لوڈشیڈنگ میں صوبے کے عوام کو بھرپور ریلیف ملنا چاہیے۔